87

اوورسیز پاکستانیوں کو پاکستان آنے پر دو دن کورنٹائین میں رہنا ہوگا

وزیراعظم عمران خان نے بیرون ملک سے پاکستان آنے والے پاکستانیوں کو 2 دن قرنطینہ میں رکھنے کا فیصلہ کرلیا ہے اور اس فیصلے سے پنجاب حکومت کو بھی آگاہ کردیا گیا ہے، جبکہ اس سے پہلے پنجاب حکومت بیرون ملک سے پاکستان آنے والوں کو 7 دن کیلئے قرنطینہ میں رکھ رہی تھی، اور واپس آنے والے پاکستانی 7 دن ہوٹل کا خرچہ بھی خود ہی اٹھا رہے تھے۔

حکومتی ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ طویل سفر کے بعد 7 روز قرنطینہ میں رکھنے سے اوورسیز پاکستانیوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا تھا تاہم اب وزیراعظم نے پنجاب حکومت کو اوورسیز پاکستانیوں کا واپس آنے پر 2 دن میں ٹیسٹ کرنے کی ہدایت کر دی ہے۔ ذرائع کے مطابق ٹیسٹ مثبت آنے کی صورت میں واپس آنے والے اوورسیز پاکستانیوں کو آئسولیشن میں رکھا جائے گا جبکہ ٹیسٹ منفی آنے پر شہریوں کو 2 دن میں ہی گھر روانہ کردیا جائے گا، جبکہ واپس آنے والے پاکستانیوں کو ان دو دنوں کا خرچہ بھی خود ہی اٹھانا ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں